اردو
Saturday 24th of February 2018
code: 83547

صومالیہ میں شدید قحط سالی، 48 گھنٹوں میں 110 افراد ہلاک

صومالیہ کے وزیر اعظم حسن علی کھائرے نے مرنے والے افراد کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ شدید خشک سالی کے باعث لاکھوں لوگوں کی زندگی خطرے سے دوچار ہے۔

صومالیہ کی حکومت نے گزشتہ ماہ 28 فروری کو خشک سالی کو قومی آفت قرار دیا تھا، جس کے بعد پہلی بار حکومت نے سرکاری سطح پر خشک سالی کے باعث ہلاکتوں کی تصدیق کی۔

واضح رہے کہ خشک سالی کی قومی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کے دوران وزیر اعظم حسن علی کھائرے نے بتایا کہ قحط سے مرنے والے تمام افراد کا تعلق ملک کے جنوب مغربی علاقے سے ہے۔

اقوام متحدہ (یو این) کےاعداد و شمار کے مطابق افریقہ کے اس خطے کے 50 لاکھ افراد کو مدد کی ضرورت ہے، جہاں خطرناک قحط کا اندیشہ موجود ہے۔

یاد رہے کہ صومالیہ ان چار ممالک میں سے ایک ہے، جن کے لیے گزشتہ ماہ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے تباہ کن بھوک اور قحط سالی سے نمٹنے کے لیے 4 ارب 4 کروڑ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا تھا۔

جن دیگر تین ممالک کے لیے امداد کا اعلان کیا گیا تھا ان میں نائیجیریا، یمن اور جنوبی سوڈان شامل ہیں۔

latest article

  ایران سے کہہ دیں کہ ہم لڑنا نہیں چاہتے: یہودی ریاست کا ...
  اسلامی انقلاب کی سالگرہ کی ریلیوں میں بھرپور شرکت پر ...
  عراق اور شام میں آٹھ ہزار امریکی فوجی محاذ مزاحمت کی زد ...
  صومالیہ کے وزير اعظم نے وزراء خارجہ، داخلہ اور تجارت ...
  مصری وزارت خارجہ کا ترکی کو انتباہ/مصر کی حاکمیت اور ...
  آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کی جان خطرے میں ہے: بحرین 14 فروری ...
  ڈیڑہ اسماعیل خان میں تکفیری دھشتگردوں کے ہاتھوں شیعہ ...
  اس سال 22 بہمن کے دن عوام بعض امریکی حکام کی دھمکیوں اور ...
  چین: امریکہ امن و صلح کی مخالف سمت میں حرکت کرنے سے باز ...
  الازہر یونیورسٹی کے اساتید کی حرم امام علی (ع) میں ...

user comment