اردو
Monday 28th of September 2020
  12
  0
  0

اس حدیث کے معنی کیا هیں که : "اگر غیبت کرنے والا توبه کرے تو بهشت میں داخل هونے والا آخری شخص هوگا اور اگر توبه نه کرے تو جهنم میں داخل هونے والا پهلا شخص هوگا"؟

ایک حدیث میں آیا هے که " اگر غیبت کرنے والا اپنےگناهوں کےبارے میں توبه کرے تو بهشت میں داخل هونے والا آخری شخص هوگا اور اگر وه توبه نه کرے تو جهنم میں داخل هونے والا پهلا شخص هوگا"- کیا کوئی ایسی حدیث هے که مثلا اس میں یه بیان کیا گیا هو که فلاں خصلت اور خصوصیت والے افراد بهشت میں داخل هونے والے پهلے افراد هوں گے، اور اگر ایسی کوئی حدیث هے تو جو شخص غیبت کا مرتکب بھی هوا هو اور مثال کے طور پر اس نے فلاں کام بھی انجام دیا هو جس کو انجام دینے والا فرد سب سے پهلے بهشت میں داخل هوگا یا یه شخص ان ان خصوصیات کا مالک هو جن کی وجه سے سب سے پهلے بهشت میں داخل هو گا، تو ایسے شخص کا کیا هوگا اور خدا وند متعال اس کے ساتھـ کیسا برتاو کرے گا ؟

  12
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

اسلام اور تشیع کی نظر میں اختیار و آزادی کے حدود کیا ...
گھریلو کتے پالنے کے بارے میں آیت اللہ العظمی مکارم ...
پیغمبر اسلام (صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم)کی سنت میں خمس کن ...
دوسرے اديان کے پيروں کے ساتھ مسلمانوں کے صلح آميز سلوک ...
ياجوج ماجوج كون تھے ؟
مھربانی کرکے شیعھ عقیده کی بنیاد کی وضاحت فرما کر اس کی ...
کیا تمباکو نوشی شریعت کی نگاہ میں جائز ہے؟
کیا قرآن اور حدیث میں لفظ ”شیعہ“ استعمال ہوا ہے؟
قرآن مجید کی آیات میں سے ایک آیہ شریفہ میں آیا ہے کہ یہ ...
انسان کی انفرادی اور اجتماعی زندگی میں قیامت پر ایمان ...

 
user comment