اردو
Sunday 19th of September 2021
302
0
نفر 0
0% این مطلب را پسندیده اند

حديث''وسنتي'' کي دوسري سند

حديث''وسنتي'' کي دوسري سند

حاکم نيشاپوري نے اس حديث کو ابو ہريرہ سے مرفوع طريقہ سے ايک ايسي سند کے ساتھ جسے ہم بعد ميں پيش کريں گے يوں نقل کيا ہے:

اِن قد ترکت فيکم شيئين لن تضلوا بعدھما : کتاب اللّہ و سنت و لن يفترقا حتي يردا علَّالحوض.

اس متن کوحاکم نيشاپوري نے درج ذيل سلسلہ سند کے ساتھ نقل کيا ہے:

''الضب'' عن ''صالح بن موسيٰ الطلح'' عن ''عبدالعزيز بن رفيع'' عن ''اءب صالح'' عن ''اءب ہريرہ''

يہ حديث بھي پہلي حديث کي طرح جعلي ہے . اس حديث کے سلسلہ سند ميں صالح بن موسي الطلحي نامي شخص ہے جس کے بارے ميں ہم علم رجال کے بزرگ علماء کے

نظريات کو يہاں بيان کرتے ہيں:

يحييٰ بن معين کہتے ہيں: کہ صالح بن موسيٰ قابل اعتماد نہيںہے . ابو حاتم رازي کہتے ہيں ، اس کي حديث ضعيف اور ناقابل قبول ہے اس نے بہت سے موثق و معتبر افراد کي طرف نسبت دے کر بہت سي ناقابل قبول احاديث کو نقل کيا ہے .

نسائي کہتے ہيں کہ صالح بن موسيٰ کي نقل کردہ احاديث لکھنے کے قابل نہيں ہيں، ايک اور مقام پر کہتے ہيں کہ اس کي نقل کردہ احاديث متروک ہيں .

ابن حجر اپني کتاب '' تھذيب التھذيب'' ميں لکھتے ہيں : ابن حِبانّ کہتے ہيں : کہ صالح بن موسيٰ موثق افراد کي طرف ايسي باتوں کي نسبت ديتا ہے جو ذرا بھي ان کي باتوں سے مشابہت نہيں رکھتيں سر انجام اس کے بارے ميں يوں کہتے ہيں: اس کي حديث نہ تو دليل بن سکتي ہے اور نہ ہي اس کي حديث حجت ہے ابونعيم اس کے بارے ميں يوں کہتے ہيں: اس کي حديث متروک ہے-وہ ہميشہ ناقابل قبول حديثيں نقل کرتا تھا

اسي طرح ابن حجر اپني کتاب تقريبميںکہتے ہيں کہ اس کي حديث متروک ہے اسي طرح ذہبي نے اپني کتاب کاشف ميں اس کے بارے ميں لکھا ہے کہ صالح بن موسيٰ کي حديث ضعيف ہے.

يہاں تک کہ ذہبي نے صالح بن موسيٰ کي اسي حديث کو اپني کتاب ''ميزان الاعتدال''

ميں ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ صالح بن موسيٰ کي نقل کردہ يہ حديث اس کي ناقابل قبول احاديث ميں سے ہے.

سيد رضا حسيني نسب

مترجم: عمران مہدي

مجمع جہاني اہل بيت (ع)

شعبہ تحرير و پيشکش تبيان

 


source : www.tebyan.net
302
0
0% (نفر 0)
 
نظر شما در مورد این مطلب ؟
 
امتیاز شما به این مطلب ؟
اشتراک گذاری در شبکه های اجتماعی:

latest article

روزہ کا ظاھر وباطن
جاہلانہ افکار کے ساتھ جوانوں کا مقابلہ
رمضان المبارک کے سترہویں دن کی دعا
روزہ احادیث کے آئینے میں - 2
سستی و جمود یا نشاط وارتقاء؟
چارلي ايبڈو ،جاہليت کا عکاسي
ایک سنجیدہ مسئلہ
عورت کی حیثیت
شہید ڈاکٹر محمد علی نقوی کی برسی
آداب نشست

 
user comment