اردو
Tuesday 22nd of September 2020
  1456
  0
  0

حجاب کی حمایت میں زبردست مظاہرے ترکی میں آئینی عدالت کے فیصلے کے خلاف اور

 

ترکی میں حکمران جماعت نے آئینی عدالت کے اس فیصلے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئينی عدالت کو حکم صادر کرنے کا حق نہیں ہے اور آئینی عدالت نے پارلیمانی امور میں بے جا مداخلت کی ترکی کی آئینی عدالت نے پارلمیان کے پردے کے قانون کو کالعدم قراردیا تھا جس میں یونیورسٹی جانے والی طالبات کو حجاب پہننے کی اجازت تھی  -

مہر خبررساں ایجنسی نے ترکی کے ذرائع کے حاولے سے نقل کیا ہے کہ ترکی میں حکمران جماعت اے کے پی نے آئینی عدالت کے اس فیصلے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئينی عدالت کو حکم صادر کرنے کا حق نہیں ہے  اور آئینی عدالت نے پارلیمانی امور میں بے جا مداخلت کی ترکی کی آئینی عدالت نے پارلمیان کے پردے کے قانون کو کالعدم قراردیا تھا جس میں یونیورسٹی جانے والی طالبات کو حجاب پہننے کی اجازت تھی ۔ اے کے پی نے کہا ہے کہ آئینی عدالت نے اپنے اختیار سے تجاوز کیا ہے۔

 پارٹی کے ایک ہنگامی اجلاس کے بعد جس کی صدارت وزیر اعظم رجب طیب اردوغان نے کی تھی ایک ترجمان نے کہا کہ عدالت کو صرف یہ اختیار ہے کہ وہ پارلیمنٹ کے منظور کردہ قانون کی پڑتال کرے، اسے یہ اختیار نہیں ہے کہ اس قانون کے متن پر کوئی فیصلہ صادر کرے۔حکمران جماعت کے نائب چیئرمین نے کہا کہ عدالت کا فیصلہ پارلیمان کے اختیارات میں براہ راست مداخلت ہے۔ جمعہ کو ترکی کے مختلف شہروں میں حجاب پہنے سینکڑوں خواتین نے عدالت کے فیصلے کو جمہوریت اور اسلام کے خلاف قراردیا۔

 


source : http://www.tebyan.net/index.aspx?pid=68090
  1456
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے رکن آیت اللہ خزعلی کا انتقال
علامہ مفتی جعفر کی برسی پر علامہ جواد نقوی کا خطاب
آیت اللہ فضل اللہ: وحدت كے عملی راستے كی اہانت، اسلام ...
پاکستان میں شہباز شریف کو وزیر اعظم نامزد کرنے کا فیصلہ
موغادیشو میں کاربم دھماکے میں 6 افراد ہلاک جبکہ 10 زخمی
شیخ نمر کی کتاب ’’عزت و وقار کی عرضداشت‘‘ ۱۱ زبانوں ...
قرآن جلانے کے منصوبے پر عملدرآمدکے خطرناک اثرات ...
متنازعہ فلم «فتنہ» کا ڈائریکٹر دوسری اسلام مخالف فلم ...
بحرینی علماء کا آل خلیفہ کے وزیر کی ہرزہ گوئیوں کے خلاف ...
میانمار کے مسلمانوں پر ظلم وستم

 
user comment