اردو
Thursday 1st of October 2020
  776
  0
  0

افغانستان میں عيسائيت كی تبليغ پر اعتراضات كا سلسلہ جاری

سياسی گروپ: افغانستان كے سينكڑوں علماء، اساتذہ اور طلباء نے صوبہ كاپيسا كی البيرونی يونيورسٹی كے كانفرنس ہال میں ايك اجتماع كرتے ہوئے اس صوبے میں عيسائت كی تبليغ كے خلاف مظاہرہ كيا ہے۔

بين الاقوامی قرآنی خبررساں ايجنسی "ايكنا" شعبہ اسلامی جمہوریہ افغانستان نے افغانستان كے ذرائع ابلاغ كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ ۴۰۰ سے زائد افراد پر مشتمل ان افراد نے حكومت مطالبہ كيا ہے كہ وہ اس ملك میں عيسائيت كی تبليغ اور مسلمانوں كو گمراہ كرنے والوں كے خلاف سختی سے نمٹے۔

البيرونی يونيورسٹی كے فيكلٹی آف شرعی علوم كے سربراہ ولی اللہ لبيب نے كہا ہے كہ اسلامی اقدار اور اعتقادات كی خاطر ۲۰ لاكھ شہيد ہونے والے اسلامی افغانستان میں عيسائيت كی تبليغ قابل برداشت نہیں ہے۔

انہوں نے مزيد كہا كہ جب حكومت اس مسئلے كے بارے میں سستی اور نرمی سے كام لے گی تو یہ حكومت اور لوگوں كے درميان دوری كا باعث بنے گی اور حكومت مخالف اس سے سوء استفادہ كریں گے۔


source : http://www.iqna.ir/ur/news_detail.php?ProdID=604648
  776
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

لاہور؛ سٹی 42 ٹی وی چینل پر دہشتگردوں کی فائرنگ
امریکی وزارت خارجہ کا اعتراف؛ سعودی اہل تشیع کو ...
دشمن ذہنی پستی کا شکارہے،ہمارے بچوں کو مارنے لگاہے، ...
قومی ایکشن پلان کے باوجود دہشتگردی کی وارداتیں باعث ...
آذربائيجان میں كتاب "اسرار التوحيد" كے روسی ترجمے كی ...
برازیل میں فلسطینی اتھارٹی کا پہلا سفارت خانہ قائم
قم میں پاكستانی ثقافتی ماہرين كی نشست كا اہتمام
مجلس علمائے ہند نے سعودی عرب میں مسجد پر ہونے والے دہشت ...
بڈگام میں بزرگ عالم دین کے مقبرے کو نذر آتش کرنے کی مذمت
مقدمہ شب قدر وہ شب ہے جس کے بارے میں قرآن کریم کا مکمل ...

 
user comment