اردو
Sunday 12th of July 2020
  1027
  0
  0

مساجد میں خواتین امامہ کا تقر دینی معاملا ت کیلئے نہ نماز پڑھانے کیلئے ، ڈائریکٹر فیتھ میڑز

لندن فیتھ میٹرز کے بانی اور ڈائریکٹر فیاض مغل نے بعض اخبارات میں دی ٹائمز کے حوالے سے شائع ہونے والی اس خبر کی تردید کی ہے کہ مختلف مساجد میں نماز پڑھانے کے لئے خواتین امامہ کا تقرر کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ غلط فہمی دی ٹائمز میں شائع ہونے والے ایک مضمون سے پیدا ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم برطانیہ کی100سے زیادہ مساجد سے تعاون کرتے ہوئے خواتین کو سہولتیں فراہم کررہے ہیں۔ مساجد میں خواتین امامہ کی تقرری کا مقصد نماز کی امامت نہیں بلکہ دینی معاملات میں خواتین کی رہنمائی کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دینی امور میں خواتین کی ایک اچھی قیادت تیار ہورہی ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ انہیں مساجد میں پیش امام کی حیثیت حاصل ہوگی۔


source : http://www.urdutimes.com/uk/69-general/41640-2010-06-04-12-57-44
  1027
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

    یمن کے تمام سیاسی گروپوں نے چودہ جون کو ہونے والے ...
    امریکہ میں مسلمان نوجوان کو گھڑی بنانے پر سزا
    اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے رکن آیت اللہ خزعلی کا انتقال
    یمن کے معروف قاضی اپنے بیوی بچوں سمیت سعودی حملے میں ...
    پشاور،سپاہ صحابہ کے دہشتگرد کی فائرنگ سے قیصر عباس ...
    عراق کا شہر فلوجہ فوج کے مکمل محاصرے میں
    سرینگر میں پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں/ کپواڑہ ...
    پاکستان؛ یا علی مدد والا لاکٹ گلے میں ڈالنے کے جرم میں ...
    علمی میدان میں اچھی پوزیشنیں حاصل کرنا فرزندان انقلاب ...
    ہندوستانی حجاج کے اہل خانہ بھی سعودی عرب روانہ

latest article

    یمن کے تمام سیاسی گروپوں نے چودہ جون کو ہونے والے ...
    امریکہ میں مسلمان نوجوان کو گھڑی بنانے پر سزا
    اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے رکن آیت اللہ خزعلی کا انتقال
    یمن کے معروف قاضی اپنے بیوی بچوں سمیت سعودی حملے میں ...
    پشاور،سپاہ صحابہ کے دہشتگرد کی فائرنگ سے قیصر عباس ...
    عراق کا شہر فلوجہ فوج کے مکمل محاصرے میں
    سرینگر میں پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں/ کپواڑہ ...
    پاکستان؛ یا علی مدد والا لاکٹ گلے میں ڈالنے کے جرم میں ...
    علمی میدان میں اچھی پوزیشنیں حاصل کرنا فرزندان انقلاب ...
    ہندوستانی حجاج کے اہل خانہ بھی سعودی عرب روانہ

 
user comment