اردو
Friday 6th of December 2019
  340
  0
  0

اس بات کے پیش نظر که اسلام ایک عالمی دین هے اور پیغبر اسلام تمام قوم و ملت کے پیغبر هی تو پھر کی طرح قرآن کے اس جمله کا معنی کیا جائے گا جس میں کیا گیا هے که: ''هم نے هر پیغبر کو ان کی قوم کی زبان میں بھیجا''؟

قرآن میں ارشاد هوا'' هم نے کسی بھی پیغبر کو اس کی قوم کی زبان سے هٹ کر نهیں بھیجا'' (تاکه وه اس کے پیغام کو قبول کرے)۔ تو پھر اس بات کے مد نظر که دین اسلام ایک عالمی دین هے اور پیغبر اسلام بھی، عالمی پیغبر هیں، یه قاعده و اصول ان غیر عرب اقوام پر کیسے جاری هوگا جن میں دین اسلام کی پیروی کا حکم دیا گیا هے؟

  340
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

    امام علی علیه السلام کی امامت اور خلافت کو کیسے ثابت ...
    مسئلہ فلسطین کے بنیادی فقہی اصول امام خامنہ ای کی نگاہ ...
    سیرت رسول اکرم (ص) میں انسانی عطوفت اور مہربانی کے ...
    ہم امریکہ کی عمر کے آخری ایام سے گذر رہے ہیں: چالمرز ...
    شفاعت کی وضاحت کیجئے؟
    دین اسلام کی خاتمیت کی حقیقت کیا ھے۔ اور جناب سروش کے ...
    کیا تقلید کے ذریعھ اسلام قبول کرنا، خداوند متعال قبول ...
    امام کے معصوم ھونے کی کیا ضرورت ھے اور امام کا معصوم ...
    کیا پیغمبر اکرم (صل الله علیه وآله وسلم) کے تمام الفاظ ...
    عورتوں کے مساجد میں نماز پڑھنے کے بارے میں اسلام کا ...

 
user comment