اردو
Tuesday 23rd of July 2019
  731
  0
  0

افغانستان میں عيسائيت كی تبليغ پر اعتراضات كا سلسلہ جاری

سياسی گروپ: افغانستان كے سينكڑوں علماء، اساتذہ اور طلباء نے صوبہ كاپيسا كی البيرونی يونيورسٹی كے كانفرنس ہال میں ايك اجتماع كرتے ہوئے اس صوبے میں عيسائت كی تبليغ كے خلاف مظاہرہ كيا ہے۔

بين الاقوامی قرآنی خبررساں ايجنسی "ايكنا" شعبہ اسلامی جمہوریہ افغانستان نے افغانستان كے ذرائع ابلاغ كے حوالے سے نقل كيا ہے كہ ۴۰۰ سے زائد افراد پر مشتمل ان افراد نے حكومت مطالبہ كيا ہے كہ وہ اس ملك میں عيسائيت كی تبليغ اور مسلمانوں كو گمراہ كرنے والوں كے خلاف سختی سے نمٹے۔

البيرونی يونيورسٹی كے فيكلٹی آف شرعی علوم كے سربراہ ولی اللہ لبيب نے كہا ہے كہ اسلامی اقدار اور اعتقادات كی خاطر ۲۰ لاكھ شہيد ہونے والے اسلامی افغانستان میں عيسائيت كی تبليغ قابل برداشت نہیں ہے۔

انہوں نے مزيد كہا كہ جب حكومت اس مسئلے كے بارے میں سستی اور نرمی سے كام لے گی تو یہ حكومت اور لوگوں كے درميان دوری كا باعث بنے گی اور حكومت مخالف اس سے سوء استفادہ كریں گے۔


source : http://www.iqna.ir/ur/news_detail.php?ProdID=604648
  731
  0
  0
امتیاز شما به این مطلب ؟

latest article

      خلیج فارس کی عرب ریاستوں میں عید الاضحی منائی جارہی ہے
      پاکستان، ہندوستان، بنگلہ دیش اور بعض دیگر اسلامی ...
      پاکستان کی نئی حکومت: امیدیں اور مسائل
      ایرانی ڈاکٹروں نے کیا فلسطینی بیماروں کا مفت علاج+ ...
      حزب اللہ کا بے سر شہید پانچ سال بعد آغوش مادر میں+تصاویر
      امریکہ کے ساتھ مذاکرات کے لیے امام خمینی نے بھی منع کیا ...
      کابل میں عید الفطر کے موقع پر صدر اشرف غنی کا خطاب
      ایرانی ڈاکٹروں کی کراچی میں جگر کی کامیاب پیوندکاری
      شیطان بزرگ جتنا بھی سرمایہ خرچ کرے اس علاقے میں اپنے ...
      رہبر انقلاب اسلامی سے ایرانی حکام اور اسلامی ممالک کے ...

 
user comment